ڈیجیٹل دنیا کو محفوط بنانے کیلئے اقدامات کی ضرورت ہے ، پنجاب یونیورسٹی سیمینار میں شرکاء کا اظہار خیال

 
لاہور (11اپریل،جمعرات): پنجاب یونیورسٹی انسٹی ٹیوٹ آف سوشل اینڈ کلچرل سٹڈیز کی ڈائریکٹر پروفیسر ڈاکٹرروبینہ ذاکر نے کہا ہے کہ ڈیجیٹل دنیا کو محفوظ بنانے کیلئے اقدامات اٹھانے کی ضرورت ہے تاکہ خواتین اور لڑکیاں خوف محسوس نہ کریں ۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے پنجاب یونیورسٹی انسٹی ٹیوٹ آف سوشل اینڈ کلچرل سٹڈیز کے زیر اہتمام ’خواتین اور لڑکیوں کے خلاف سائبر ہراسگی ‘ کے موضوع پرمنعقدہ سیمینار سے کیا۔ اس موقع پر ڈیجیٹل رائٹس فاؤنڈیشن سے زینب درانی اور شمائلہ خان ، فیکلٹی ممبران اور طلباؤطالبات نے شرکت کی۔ اپنے خطاب میں ڈاکٹر روبینہ ذاکر نے کہا کہ سائبر ہراسگی کی زیادہ تر شکار خواتین اور لڑکیاں ہوتی ہیں ۔انہوں نے کہا کہ خواتین کو ڈیجیٹل رازداری کے متعلق آگاہی فراہم کی جانی چاہیے تاکہ ان کا ذاتی ڈیٹا کسی بھی غلط ہاتھوں میں نہ جاسکے ۔ انہوں نے کہا ہے کہ سائبر ہراسگی سے خواتین کو خوف زدہ ہونے کی ضرورت نہیں کیونکہ اس سلسلے میں حکومت نے سخت قوانین متعارف کروا کر سائبر کریمنلز کو اہم سزائیں دی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ سیمینار کے انعقاد کا مقصد نوجوانوں کی اہم معاملے کی جانب توجہ مبذول کرانااوران کی معلومات میں اضافہ کرنا تھا۔ زینب درانی اور شمائلہ خان نے خواتین اور لڑکیوں کودرپیش آن لائن ہراسگی پر سیر حاصل گفتگو کی۔ انہوں نے پاکستان کے Prevention of Electronic Crimes Act 2016کے بارے میں شرکاء کو بتایا۔