ویٹرنری یونیورسٹی:چھنامارولیس مچھلی کی کامیاب افزائش نسل

لاہور(۱۵مئی): یونیورسٹی آف ویٹرنری اینڈاینیمل سائنسز لاہور کے ڈیپار ٹمنٹ آف فشری اینڈ ایکوا کلچر نے فشری ڈیپارٹمنٹ پنجا ب کے تعا ون سے میا نوا لی کی چشمہ فش با ئیو ڈا ؤرسٹی ہیچر ی میں چھنا ما رو لیس مچھلی کی افزا ئش نسل کامیا بی کے ساتھ کی۔چیر مین ڈیپا ر ٹمنٹ آ ف فشر یز اینڈ ایکوا کلچر ڈا کٹر نو رخا ن اور ٹیم لیڈر ڈپٹی ڈا ئر یکٹر فش با ئیو ڈا ؤرسٹی ہیچر ی ملک محمد رمضا ن کی زیر قیادت ٹرا ئل کیئے گئے۔قبل ازیں دو نو ں تحقیق کا رو ں نے پنجاب ایگریکلچر ریسر چ بو رڈ کے فنڈڈ تحقیقی پرا جیکٹ کے تحت تھا ئی لینڈ میں ایک ما ہ کی ٹریننگ بھی حاصل کی جس میں اُنہو ں نے چھنا مچھلی کی افزا ئش نسل سے متعلقہ مختلف تیکنیکی مہا رتیں سیکھیں۔
چھنامچھلی کا سر سانپ کے ساتھ مشا بہت رکھتا ہے اور یہ مچھلی عام طور پرسانپ کے سر والی مچھلی کے نام سے جانی جا تی ہے۔عام طور پر چھنا مچھلی گرم ملکو ں افریقہ جنو بی مشر قی ایشیا اور ایسٹ ایشیا میں وسیع پیما نے پر پا ئی جاتی ہیں۔