پنجاب یونیورسٹی میں شہداء کے بچوں کے لئےمفت تعلیم،رہائش اور وظیفہ کا اعلان

لاہور (6ستمبر،جمعہ):وائس چانسلر پنجاب یونیورسٹی پروفیسر نیاز احمداختر نے پاک فوج اور پولیس کے شہداء کے بچوں کے داخلے کے لئے خصوصی کوٹے، مفت تعلیم، پانچ ہزار روپے ماہانہ سکالرشپ اور ہاسٹل میں مفت رہائش کا اعلان کیا ہے۔

یہ اعلان ڈاکٹر نیاز احمد اختر نے یوم دفاع پاکستان کی مناسبت سے شہداء کو خراج تحسین پیش کرنے کے لئے اپنے دفتر میں منعقدہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے وائس چانسلرپروفیسر نیاز احمد نے کہا کہ پنجاب یونیورسٹی نے ہر شعبے میں شہداء کے بچوں کے لئے دو دو نشستیں مختص کی ہیں اور رواں سال سے بی ایس اور ماسٹرز کی سطح پر پاک فوج اور پولیس کی نامزدگی پر شہداء کے225 بچوں کو داخلہ دیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ کوٹے اور میرٹ پر داخل ہونے والے شہداء کے بچوں کو مفت تعلیم دی جائے گی اور انہیں ماہانہ پانچ ہزار روپے کی سکالرشپ بھی فراہم کی جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ یونیورسٹی میں داخلہ لینے والے شہداء کے بچوں کو ہاسٹل میں مفت رہائش کی سہولت بھی فراہم کی جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ شہداء کے ہم پر عظیم احسانات ہیں اور ہم ان احسانات کا بدلہ کسی صورت نہیں چکا سکتے تاہم ہم سب کو کوشش کرنی چاہئے کہ شہداء کے خاندانوں کی ذیادہ سے ذیادہ مدد کریں۔ انہوں نے کہا کہ شہداء کی بدولت آج ہم آزادی کی فضاء میں سانس لے رہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ دیگر اداروں کے سربراہان کو بھی شہداء کے خاندانوں کے لئے ایسے اقدامات کا اعلان کرنا چاہئے۔ وائس چانسلر نے پریس کانفرنس کے دوران کہا کہ پاک فوج 1999ء کے بعد مسلسل ملک کا دفاع کر رہی ہے اور کسی ایک بھی فوجی نے کبھی بھی پشت پر گولی نہیں کھائی بلکہ بہادری سے سینے پر گولی کھائی ہے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستانی فوجیوں کا جذبہ شہادت مثالی ہے اور اس معاملے میں دنیا کی تمام افواج میں پاکستانی فوجی امتیازی حیثیت رکھتے ہے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستانی فوج گزشتہ بیس سال سے دہشت گردی کے خلاف جنگ لڑ رہی ہے اور ہر محاذ پر دشمنوں کو شکست سے دوچار کیا ہے۔

قبل ازیں وائس چانسلر پنجاب یونیورسٹی پروفیسر نیازا حمد نے یوم دفاع پاکستان، شہداء کو خراج تحسین پیش کرنے اور کشمیریوں سے اظہار یکجہتی کرنے کے لئے انسٹی ٹیوٹ آف ایجوکیشن اینڈ ریسرچ سے مین کیمپس روڈ سے ہوتے ہوئے گیٹ نمبر1 اور کیمپس کے اندر ریلی کی قیادت کی۔ ریلی میں ہزاروں اساتذہ، ملازمین، طلباؤ طالبات اور سکول کے بچوں نے شرکت کی۔ اپنے خطاب میں وائس چانسلر پروفیسر نیازا حمد نے کہا کہ زندہ قومیں اپنے محسنوں کی قربانیاں ہمیشہ یاد رکھتی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ بھارتی حکومت کے غیر قانونی اقدام کو دنیا میں کہیں بھی پذیرائی نہیں مل رہی۔ انہوں نے کہا کہ پاکستانی قوم کشمیر کی آزادی کیلئے خون کے آخری قطرے تک کشمیریوں کا ساتھ دے گی جس کے لئے ہم پاک فوج اور حکومت کے فیصلے کے منتظر ہیں۔انہوں نے کہا کہ اگر اقوام متحدہ کشمیر پر اپنی قراردادوں پر عملدرآمد نہیں کرا سکتی تو اس کا کوئی فائدہ نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ بھارت مقبوضہ علاقے میں انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیاں کر رہا ہے اور کرفیو لگا کر عوام کو بنیادی حقوق سے محروم کر رکھا ہے۔ ریلی میں شریک افرادنے پاکستان اور کشمیر کے جھنڈے، ’کشمیر بنے گا پاکستان‘ کشمیر پاکستان کی شہ رگ ہے اور’کشمیر کو انصاف دو‘جیسے درج نعروں پر مشتمل پلے کارڈز اور بینرز تھامے ہوئے تھے۔ شرکاء مودی حکومت اور بھارتی جارحیت کے خلاف فلک شگاف نعرے لگاتے رہے۔بعد ازاں وائس چانسلر پروفیسر نیاز احمد اختر کی قیادت میں پنجاب یونیورسٹی کے وفد نے شہداء کو خراج تحسین پیش کرنے کیلئے یادگار شہداء پر حاضری دی، پھول چڑھائے اور فاتحہ خوانی کی۔