ہایئر ایجوکیشن کمیشن نے پاک۔ ترک ریسرچرز موبیلیٹی گرانٹ کے لیے درخواستیں طلب کر لیں

اسلام آباد، 8اکتوبر2019: ہایئر ایجوکیشن کمیشن نے پاکستان کی نجی جامعات اور منظورشدہ نجی جامعات کے اساتذہ کرام سے پاک۔ ترک ریسرچرز موبیلیٹی گرانٹ(Pak-Turk Researchers' Mobility Grant) کے تحت مشترکہ تحقیقی پراجیکٹس کے لیے پروپوزل مانگ لیے ہیں۔ جن چھ شعبہ جات کا تعین کیا گیا ہے ان میں انرجی ٹیکنالوجیز، فوڈ ٹیکنالوجیز، پائیدار ماحولیاتی ٹیکنالوجیز، مٹیریل سائنس، اسمارٹ ٹرانسپورٹیشن سسٹمزاور روبوٹ اینڈ اسمارٹ سسٹم شامل ہیں۔
پاک۔ ترک ریسرچرز موبیلیٹی گرانٹ پاک۔ ترک تعلقات کا ثمر ہے جو کہ اعلی تعلیمی سسٹمز کو عالمگیریت کے دائرہ کار میں لاتا ہے۔ یہ پروگرام ترکی میں کونسل آف ہایئر ایجوکیشن اور پاکستان میں ہایئر ایجوکیشن کمیشن کے تحت چلایا جارہا ہے جس کا مقصد تعلیمی اور تحقیقی سرگرمیوں کا فروغ ہے۔
مزید براں اس پروگرام کا مقصد طلباء اور اساتذہ کی آمدورفت میں معاونت کے ذریعے ترک اور پاکستانی اعلی تعلیمی اداروں کے مابین سائنسی اور تکنیکی تعاون کو فروغ دیا جائے۔
اس پروگرام کے تحت فنڈنگ ان درخواست گزاروں کو دی جائے گی جو پاکستان کی سرکاری یا منظور شدہ نجی جامعہ میں بطور فیکلٹی ممبر کام کررہے ہوں گے۔ یاد رہے پاکستانی محققین کو اپنے ترک پارٹنر کی شناخت کرنا ہوگی۔ دیے گئے لنک پر اس گرانٹ کا درخواست فارم موجود ہے: www.hec.gov.pk/site/ptrg
تحقیقی شراکت داروں کو ایک ہی وقت میں پاکستان اور ترکی میں درخواستیں جمع کروانا ہوں گی جبکہ ای پارٹنر یونیورسٹیز کو ترکی کی طرف سے مولانا ایکسچینج پروگرام پروٹوکول پر دستخط کرنے ہوں گے۔
ایک پرنسپل انویسٹی گیٹر کی جانب سے ایک ہی ریسرچ پروجیکٹ کوفنڈنگ کے لیے پیش کیا جا سکتا ہے۔