پاکستانی طالبعلم کااعزاز: ڈپریشن سے بحالی کے تحقیقاتی منصوبے پر بین الاقوامی ایوارڈ جیت لیا

لاہور (11اکتوبر،جمعہ):پنجاب یونیورسٹی شعبہ الیکٹریکل انجیئنرنگ کے فارغ التحصیل طالبعلم محمد حمزہ احتشام نے دنیا کی سب سے بڑی ٹیکنیکل تنظیم انسٹی ٹیوٹ آف الیکٹریکل اینڈ الیکٹرونکس انجیئنرنگ، بلتیمور میری لینڈ، امریکہ میں مائیرون زکر انڈرگریڈ ڈیزائن مقابلے2019 ء "Rehabilitation of Depression Through Neuro-Feedback System Using EEG Technology"منصوبہ پیش کیا اور دنیا کے 160ممالک میں تیسری پوزیشن اپنے نام کر لی۔انہوں نے یہ منصوبہ مختلف ریسرچ لیب اور نیشنل گراس روٹس آئی سی ٹی ریسرچ انیشیٹیٹو کے تعاون سے مکمل کیاجو بلاشبہ پنجاب یونیورسٹی شعبہ الیکٹریکل انجیئنرنگ کاعالمی معیار کا تاریخی منصوبہ ہے۔ اس منصوبہ کے متعلق محمد حمزہ پنجاب یونیورسٹی اور ایف سی کالج میں ٹیڈ ٹاک کر چکے ہیں۔
واضح رہے کہ گزشتہ برس بھی اس منصوبہ پرمحمد حمزہ کو 160ممالک میں دوسری پوزیشن ملی تھی۔
وہ پنجاب یونیورسٹی اور شعبہ الیکٹریکل انجینئرنگ کا دنیا بھر میں مثبت تشخص اجاگر کرنے میں بھرپور کردار ادا کر رہے ہیں۔ یہ سنگ میل عبور کرنے پر محمد حمزہ نے اللہ تعالیٰ کا شکر ادا کرتے ہوئے کہا کہ وہ اپنا ایوارڈ پاکستان اور پنجاب یونیورسٹی کے نام کرتے ہیں۔ انہوں نے اپنے اساتذہ، والدین، ٹیم ممبران عمر فیاض اور محمد عقیل احسن، جونیئرممبران اوسامہ، دانش، حریم، آمنہ حمزہ اور عادل کی کاوشوں اور حوصلہ افزائی پر بھی شکریہ ادا کیا۔ اس موقع پر پنجاب یونیورسٹی شعبہ الیکٹریکل انجینئرنگ کے انچارج ڈاکٹر اظہر نعیم، سٹوڈنٹ ایڈوائزر ڈاکٹر کامران عابد اور کو آرڈینیٹر ڈاکٹر محمد کاشف سمیع نے سنگ میل عبور کرنے پر محمد حمزہ کو مبارک باد پیش کی ہے۔انہوں نے کہا کہ تحقیقی شعبہ میں بہتری کیلئے  شعبہ میں جلد ایم ایس پروگرام کا آغاز کیا جائے گا جبکہ پی ایچ ڈی پروگرام شروع کرنے کیلئے بھی اقدامات کئے جا رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ محمد حمزہ جیسے طلبہ یونیورسٹی کا فخر ہیں۔