کوالٹی ایشورنس سے متعلق ہایئر ایجوکیشن کمیشن کی بین الاقوامی کانفرنس 4اور5دسمبرکو ہوگی

اسلام آباد، 2دسمبر2019: ہایئر ایجوکیشن کمیشن یونائیٹڈ اسٹیٹس ایجوکیشنل فاؤنڈیشن ان پاکستان (USEFP)کے اشتراک سے اسلام آباد کے نجی ہوٹل میں 4-5دسمبر 2019کو کوالٹی ایشورنس سسٹم، معیار اور پالیسی سازی: مسائل اور چیلنجز کے عنوان سے دو روزہ کانفرنس کا انعقاد کر رہا ہے۔
اس کانفرنس کا مقصد اعلی تعلیم کی کولٹی میں بہتری لانا اور کونسل فار ہایئر ایجوکیشن اینڈ ایکریڈی ٹیشن (CHEA)، امریکہ کے منتخب اراکین کو یکجا کرنا اور بین الاقوامی کوالٹی ایشورنس معیارات کے حوالے سے باہمی افہام و تفہیم کرنا ہے۔ اس کانفرنس سے پاکستانی جامعات کے سربراہان کو یہ موقع میسر آئے گا کہ وہ دوسرے ممالک کی جامعات کے تجربات سے آگاہی حاصل کریں اور بالخصوص ان غیر ملکی جامعات کے سربراہان کو اپنے تجربات کے بارے میں معلومات فراہم کریں، جو اپنے اعلی تعلیمی سسٹم کی داغ بیل ڈالنے میں مصروف ہیں۔
مزید براں اس کانفرنس کے ذریعے کوالٹی کلچر کو استحکام ملے گا اور عالمی سطح پر درپیش چیلنجز کا سامنا کرنے اور ایک دوسرے کی معاونت کرنے کے لیے مشترکہ میدان کی فراہمی ہوگی۔ اس کانفرنس کے ذریعے وسائل کو متحرک کیا جائے گا، معیار بنایا جائے گااور مشترکہ طور پر سیکھنے کے عمل کا آغاز ہو گا۔ اس کانفرنس کی بدولت بہتر کوالٹی سسٹم بشمول اساتذہ کی بہتر استعداد کار اور پروگراموں کی کوالٹی بہتربنانے میں مدد ملے گی اور ایسا میکانزم تیار کرنے میں آسانی ہو گی کہ جس کے تحت پرفارمنس کو برقرار رکھنے اور بڑھانے میں مدد ملے گی۔
یہ کانفرنس خصوصی طور پر دوسرے ممالک کے تجربات کے اسباق، مشترکہ ایجنڈا کی تکمیل کے لیے بین الاقوامی اشتراک، پاکستان میں اعلی تعلیم کی کوالٹی ایشورنس کی علاقائی اور قومی سطح پر ترقی، ٹیچنگ کو مزید فعال بنانا، ٹیچنگ ایکسی لینس فریم ورک کی تیاری اور قومی اور بین الاقوامی اعلی تعلیمی اداروں کے مابین نیٹ ورکنگ کو فروغ دینے جیسے عوامل کو فروغ دے گی۔ اس کانفرنس کے ذریعے ہایئر ایجوکیشن کمیشن کی کوالٹی ایشورنس ایجنسی، بین الاقوامی کوالٹی ایشورنس ایجنسیوں، اعلی تعلیمی وزارتوں اور اداروں کے ساتھ اپنے روابط استوار کرے گی اور پاکستان میں ٹیچنگ ایکسی لینس اور ریسرچ ایکسی لینس کے لیے فریم ورک کی تیاری میں ماہرانہ آراء وصول کرے گی۔  مزید براں اس کانفرنس میں نیشنل اکیڈمی آف ہایئر ایجوکیشن (NAHE)کو ایک مؤثر لیڈرشپ اکیڈمی بنانے، اعلی تعلیمی اداروں میں ٹیچنگ، لرننگ، ریسرچ، اور کمیونٹی سروسز میں بہتری اور جامعات اور انڈسٹری کے درمیان تعلقات میں استحکام کے بارے میں بھی آراء بھی لی جائیں گی۔

اس کانفرنس میں جامعات کے ایڈمنسٹریٹرز، ایکریڈی ٹیشن کونسلوں کے سربراہان اور سیاسی قیادت بھی شریک ہو گی۔

ہایئر ایجوکیشن کمیشن نے اعلی تعلیم کی کوالٹی کو مزید بہتر کرنے اور یقینی بنانے کے لیے سال 2005میں کوالٹی اشیورنس ایجنسی بنائی تھی جبکہ ملک بھی کی 180جامعات میں کوالٹی ایشورنس سیلز کا قیام عمل میں لایا گیا ہے اور پاکستان کوالٹی سے متعلقہ علاقائی اور بین الاقوامی داروں کا رکن ہے۔